پايگاه اطلاع رساني دفتر آيت الله العظمي شاهرودي دام ظله
ArticleID PicAddress Subject Date
{ArticleID}
{Header}
{Subject}

{Comment}

 {StringDate}
Tuesday 11 December 2018 - الثلاثاء 02 ربيع الثاني 1440 - سه شنبه 20 9 1397
 
 
 
 
  • حیض  
  • Sendtofriend
  •  
  •  
  •  

    حیض وہ خون ہے جو ہر مہینے چند روز عورت کے رحم سے خارج ہو تا ہے اور عورت کو اس زمانے میں حائض کہتے ہیں۔

    مسئلہ٨٩:خون حیض اکثر اوقات گاڑھا، گرم اور سیاہ رنگ کا ہو تا ہے، اور کبھی سرخ بھی ہو تا ہے اور قوت اور جلن کے ساتھ آتا ہے۔

    مسئلہ٩٠:وہ خون جو لڑکی کے نو/ ٩ سال ختم ہونے سے پہلے اور یائسہ ہونے کے بعد خارج ہو تو وہ حیض نہیں ہے۔

    مسئلہ٩١:حیض کی مدت تین دن سے کم اور دس دن سے زیادہ نہیں ہو تی اور اگر تین دن سے مختصرسی مدت بھی کم ہو تو اس کو حیض نہیں کہتے۔

    مسئلہ٩٢:وہ خون جو لڑکی کے نو سال کے ختم ہو نے سے پہلے یا عو رت کے یائسہ ہونے کے بعد آۓ تو وہ حیض نہیں ہے۔

    مسئلہ٩٣:وہ لڑکی جسکو معلوم نہ ہو کہ اس کے نو /٩ سال پورے ہو گۓ ہیں یا نہیں اگر وہ خون دیکھے اور اس میں حیض کی علامتیں نہ ہوں تو وہ حیض نہیں ہے اور اگر اس میں حیض کی علامتیں ہوں تو وہ حیض ہے۔

    احکام حائض

    مسئلہ٩٤:چند چیزیں حائض پر حرام ہیں۔

    ١۔ وہ عبادتیں جن میں طہارت شرط ہے جیسے نماز، روزہ، طواف وغیرہ۔

    ٢۔ وہ تمام چیزیں جو مجنب پر حرام ہیں حائض پر بھی حرام ہیں۔

    ٣۔ حیض کے دنوں میں جماع کرنا مرد اور عورت دونوں پر حرام ہے، اگر چہ ختنہ کی مقدار ہی داخل ہوئ ہو اور منی بھی نہ نکلی ہو، لیکن حائض عورت کی دُبر میں جماع کرنا مکروہ ہے، مگر دوسری لذتیں حاصل کرنے میں کوئ حرج نہیں ہے۔

    مسئلہ٩٥:حالت حیض میں عورت کو طلاق دینا صحیح نہیں ہے جس کا بیان کتاب طلاق میں آۓ گا۔

    مسئلہ٩٦:پنجگانہ نمازیں جو حالت حیض میں نہیں پڑھی ہیں اُن کی قضاء نہیں ہے لیکن واجب روزوں کی قضا ضروری ہے۔

    مسئلہ٩٧:اگر عورت نماز کے آخری وقت میں پاک ہو جاۓ اور اسے اتنا وقت مل جاۓ کہ وہ غسل و و ضوء اور نماز کے دوسرے مقدمات مثلاً لباس مہیّا کرنا اور پاک کرنے کا وقت ہو تو ایک رکعت یا ایک رکعت سے زیادہ کا وقت ہو تو نماز پڑھے اور اگر نہ پڑھے تو اس کی قضاء بجا لاۓ اور اگر فقط ایک رکعت کی مقدار وضوء اور غسل کے ساتھ نماز پڑھ سکتی ہو تو احتیاط واجب یہ ہے کہ نماز پڑھی جاۓ اور نہ پڑھنے کی صورت میں قضاء بجا لاۓ۔

    مسئلہ٩٨:اگر عورت خون حیض سے پاک ہو جاۓ اگر چہ اس نے ابھی غسل بھی نہ کیا ہو تو اس کا شوہر اس سے جماع کر سکتا ہے ۔مگر احتیاط شدید یہ ہے کہ جماع سے پہلے شرمگاہ کو دھولے، اگر چہ احتیاط مستحب یہ ہے کہ غسل سے پہلے جماع نہ کرے۔

     
     
  • RelatedArticle
  •  
     
     
     
     

    The Al-ul-Mortaza Religious Communication Center, Opposite of Holy Shrine, Qom, IRAN
    Phone: 0098 251 7730490 - 7744327 , Fax: 0098 251 7741170
    Contact Us : info @ shahroudi.net
    Copyright : 2000 - 2011